این سی او سی کا ویکسینیشن کے حوالے سے سخت اقدامات کا فیصلہ

اسلام آباد: این سی او سی نے  لازمی ویکسینیشن پر عمل درآمد یقینی بنانے کے لیے سخت اقدامات کا فیصلہ کرلیا۔ 

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کا اہم  اجلاس وفاقی وزیر اسد عمر کی زیر صدارت ہوا، جس میں کورونا وباء کے کرو چارٹ، قومی ویکسینیشن حکمت عملی اور بیماری کے پھیلاؤ کا جائزہ لیا گیا، جب کہ فیصلہ کیا گیا کہ کورونا کی نئی قسم (اومیکرون) کے پھیلاؤ کے خدشے کے پیش نظر  لازمی ویکسینیشن پر عمل درآمد یقینی بنانے کے لیے سخت اقدامات کئے جائیں گے۔

این سی او سی نے تمام شہروں سے ویکسینیشن یقینی بنانے کی درخواست کرتے ہوئے کہا ہے کہ یکم جنوری سے 30 سال سے زائد عمر کے افراد بوسٹر ڈوز لگوا سکیں گے، گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں 7 لاکھ 13 ہزار 582 افراد کی ویکسینیشن کی گئی، اور مجموعی طور پر ملک بھر میں 14 کروڑ 15 لاکھ 9 ہزار 339 افراد کی ویکسینیشن مکمل کرلی گئی ہے، جب کہ ملک بھر میں 58 فیصد افراد کی کورونا ویکسینیشن مکمل کرلی گئی ہے۔

این سی او سی نے بتایا کہ دنیا بھر کے 95 ممالک میں امیکرون ویریئنٹ کے 58 ہزار کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں، یورپ میں وباء کا مرکز ہونے کی وجہ سے یوکے اور ڈنمارک میں سب سے زیادہ نمبرز رپورٹ ہوئے، بھارت میں اب تک امیکرون ویرئنٹ کے 149 کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں، عوام سے درخواست ہے کہ کورونا ویکسینیشن کو یقینی بنائیں۔